SHARE
Sponsored

تحریک لبیک کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی امام کعبہ کی جانب سے اتحاد امت کی بات کئے جانے پر بھڑک اٹھے اور اب ان کی تقریر کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے۔

Sponsored

ویڈیو میں علامہ خادم حسین رضوی کو کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ ”کہتے ہیں کہ اتحاد امت چاہئے۔ میں کہتا ہوں کہ اتحاد امت کی باتیں کعبہ میں کرو۔ وہاں جو جاتا ہے اسے کہتے ہیں کہ ہذا حرام، ہذا شرک۔۔۔ وہاں اتحاد امت کی باتیں کرو۔ جو چار لاکھ روپے لگا کر مدینہ جاتا ہے اسے چار سے پانچ منٹ بھی حضورﷺ کے سامنے نہیں کھڑے ہونے دیتے۔ یہاں پاکستان میں آ کر اتحاد امت یاد آیا؟

کعبہ جا کر ایسی تقریریں کرو اور اپنے حکمرانوں کو سمجھاﺅ کہ ٹرمپ کو سونے نہیں دئیے جاتے، اگر سونا دینا تھا تو ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو دینا تھا۔ حضورﷺ کے سامنے صحن میں کوئی بیٹھ کر رسول اللہﷺ کی طرف دیکھ رہا ہو تو آپ کے ’ملا‘ آپ کرکہتے ہیں کہ دوسری طرف دیکھو، آپ تو حضورﷺ کی طرف دیکھنے بھی نہیں دیتے، کون سے اتحاد امت کی بات کرتے ہو۔

یہاں ہم باتیں کرنے کیلئے کافی ہیں، آپ کعبہ میں تقریریں کرو، آپ تو ہمارے فیض آباد دھرنے کیلئے دعا بھی نہ مانگ سکے اور آج یہاں تقریریں کرنے آ گئے ہو۔ ہماری قوم بھی ایسی کہ ماشاءاللہ، کیا ماشاءاللہ؟ بات تو وہ ہے جو موقع پر کی جائے، وہاں تقریریں کرو کہ ٹرمپ ذلیل ہے۔

عربوں نے سب سے بڑا بت خانہ دبئی میںبنانے کی کیوں اجازت دی ہے، رسولﷺ بت خانے گراتے رہے اور آپ بت خانے بنوا رہے ہو، حرم میں تقریر کرو کہ یہ بت خانہ کیوں بنا۔ 360 بت تو رسولﷺ خود گرائے۔“

Advertisements