SHARE
Sponsored

لاہور (ویب ڈیسک) انوسٹی گیشن پولیس کینٹ نے مجرے کے دوران اشتعال میں آکر پلاسٹک پائپ فیکٹری کے مالک کو قتل کرکے فرار ہونے والی ”کال گرل“ کا سراغ لگاتے ہوئے ملزمہ’  ف‘ کو گرفتار کر لیا ۔

Sponsored

روزنامہ جنگ کے مطابق لڑکی نے دوران تفتیش پولیس کو بتایا کہ اسے ڈانس کے لئے بلایا گیا لیکن اس کے ساتھ چھیڑ چھاڑ شروع کر دی جس کے نتیجے میں اس نے مقتول سید مختار کو چھریوں کے پے در پے وار کر کے قتل کر دیا اور موقع سے فرار ہو گئی ۔

دوسری طرف مقتول کے بھائی نے پولیس کو بتایا کہ جب میں اور میرے دیگر دوست ڈیفنس پہنچے تو ایک نامعلوم عورت نیم برہنہ حالت میں گھر سے باہر نکل رہی تھی، جبکہ میرا بھائی سید مختار خون میں لت پت فرش پر پڑا ہوا ہے اور اس کے جسم پر مختلف حصوں پر چھری کے وار کے نشانات تھے، انہیں نیشنل ہسپتال ڈیفنس لے جایا گیا ،میرے بھائی سید مختار نے بتایا کہ ایک نامعلوم عورت نے مجھ پر جان سے مارنے کی نیت سے چھری کے وار کئے ہیں۔

ہسپتال میں میرا بھائی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا۔ایس پی انوسٹی گیشن کینٹ ڈاکٹر انوش مسعود نے بتایا کہ پولیس نے تمام پہلوﺅں کو سامنے رکھ کر تفتیش کی تو معلوم ہوا کہ اس جھگڑے کا باعث ایک کال گرل ہے جس پر پولیس نے انتہائی مہارت سے ملزمہ کو گرفتار کیا جس نے پولیس کے سامنے اعتراف جرم کیا ہے کہ اس نے دوران مجرا جھگڑا ہونے پر مقتول کو قتل کیا۔

Advertisements